شربت فروش محمد حذیفہ تعلیمی میدان میں بڑا دھماکا کر ڈالا

Spread the Story
  • 213
    Shares

ملتان (جی سی این رپورٹ) ملتان سے تعلق رکھنے والے 16 سالہ لڑکا محمد حذیفہ تعلیمی قابلیت کی بنیاد پر سوشل میڈیا پر ہیرو بن چکا ہے۔محمد حذیفہ نے میٹرک سائنس کے امتحانات میں ملتان بورڈ میں 1050 نمبر لیے تھے۔اس بچے نے پچھلے سال میٹرک کے امتحان میں 1100 میں سے 1050 نمبر حاصل کیے تھے، ہنرمند حذیفہ اپنے غریب کنبے کا واحد کفیل ہے۔
بتایا گیا ہے کہ محمد حذیفہ کے والدین حیات نہیں ہیں،اور مشکل حالات نے اسے اپنے خاندان کو پالنے کے لئے جوس فروش کی حیثیت سے کام کرنے پر مجبور کیا۔جس کے بعد اس نے ملتان کے علاقے گلہ منڈی میں جوس بیچنا شروع کر دیا۔بتایا گیا ہے کہ انھیں نجی کالج میں اسکالرشپ کی پیش کش کی گئی تھی ، لیکن وہ اپنی ملازمت چھوڑ نہیں سکے تھے۔تاہم بچے کو اعلی تعلیم دلوانے،اپنے خوابوں کو پورا کرنے اور خاندان کی کفالت کے لیے پاکستان بیت المال نے مالی مدد کی پیشکش کی ہے۔جونہی یہ خبر وائرل ہوئی ، بیت المال کی ٹیم کے پاس گئی اور نوجوان لڑکے کو مالی امداد کا وعدہ کیا۔بیت المال کے منیجنگ ڈائریکٹر عون عباس بپی نے بتایا کہ فلاحی ادارے نے لڑکے سے ملاقات کی اور مالی مدد کی پیشکش کی۔

انہوں نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان بیت المال ٹیم نے شفقت پدری سے محروم، 5 بہن بھائیوں کے واحد کفیل، ملتان کے رہائشی محمد حذیفہ سے رابطہ کیا ہے۔
بیت المال کی جانب سے محمد حذیفہ کے تعلیمی اخراجات برداشت کرنے کے ساتھ ساتھ انکو فوری مالی مدد بھی فراہم کی جائے گی۔دوسری جانب سوشل میڈیاپر بھی صارفین کی جانب سے ہونہار طالب علم کو خوب سراہا جا رہا ہے۔اور ان کے روشن مستقبل کے لیے بھی دعا کی جا رہی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.