طلباو طالبات کیلئے بڑی خوشخبری ۔۔ ابن ایم ایس اور ایم فل کے بغیر ہی پی ایچ ڈی کی ہوسکے گی،پرانے طلبا بھی مستفید ہوں گے، نوٹیفکیشن جاری

Spread the Story
  • 213
    Shares

طلباو طالبات کیلئے بڑی خوشخبری ۔۔ ابن ایم ایس اور ایم فل کے بغیر ہی پی ایچ ڈی کی ہوسکے گی،پرانے طلبا بھی مستفید ہوں گے، نوٹیفکیشن جاری

اسلام آباد (گلوبل کرنٹ نیوز) ہائیر ایجوکیشن کمیشن پاکستان نے پی ایچ ڈی کے لیے ایم ایس اور ایم فل کی شرط ختم کر دی ہے۔ ہائیر ایجوکیشن کمیشن (ایچ ای سی) کی جانب سے پی ایچ ڈی کی پالیسی کا نوٹیفکیشن بھی جاری کر دیا گیا جس سے پُرانے طلبا بھی مستفید ہوں گے۔ اس حوالے سے ایچ ای سی کے چیئرمین طارق بنوری نے کہا کہ پی ایچ ڈی میں ایم ایس،ایم فل کی شرط ختم کر دی گئی ہے، طلبا اب بی ایس کے بعد براہ راست پی ایچ ڈی میں داخلہ لے سکتے ہیں۔

طلبا کے لیے پریکٹیکل کے طور پر انٹرن شپ لازمی قرار دی گئی ہے، طلبا اپنے شہر میں رہ کر ان پیڈ انٹرنشپ کریں گے۔ اُن کا کہنا تھا کہ ہمیں ڈگری کی ویلیو بڑھنے کی فکر ہے، طلبا کو غیر نصابی سرگرمیوں میں حصہ لینا لازمی ہوگا۔جبکہ جنرل ایجوکیشن لینا بھی لازمی ہو گا۔ خبر رساں ادارے کے مطابق اس نوٹیفکیشن کے مطابق اس پالیسی کا اطلاق بیک وقت پورے ملک کی جامعات میں کوالٹی پی ایچ ڈی کی پروڈکشن کے لیے ہوگا، نوٹیفیکیشن کے تحت جامعات میں پہلے سے انرولڈ پی ایچ ڈی کے طلبہ پر مکمل یا من و عن اطلاق نہیں ہوگا تاہم پالیسی کے کچھ جزوی حصوں سے پُرانے طلبا فائدہ لے سکتے ہیں۔اس حوالے سے نوٹیفیکیشن میں پالیسی کے annexure 1.8 کا حوالہ دیا گیا جس کے مطابق سیکشن 4.4 بی جو کہ تھیسز کی ایویلیو ایشن کے حوالے سے ہے اور پی ایچ ڈی تھیسز کی ایویلیو ایشن اب پاکستانی پروفیسر بھی کرسکتے ہیں اور اگر طالب علم اپنا ریسرچ پیپر ایکس کیٹگری کے جنرل میں شائع کروالیں تو اس کے پی ایچ ڈی تھیسز کو صرف ایک ہی پروفیسر کے پاس ایویلیو ایشن کے لیے بھیجا جاسکتا ہے۔ پالیسی کی اس شق سے پہلے سے انرولڈ پی ایچ ڈی طلبہ بھی اب فائدہ لے سکیں گے۔ مزید برآں شق 4.5 کے مطابق پی ایچ ڈی ڈگری کے حصول کے لیے ”y” کیٹگری میں ایک ریسرچ پیپر شائع کروانا ضروری ہے اسی طرح 4.7 شق میں طلبا کو اپنی پی ایچ ڈی ڈگری کم سے کم تین اور زیادہ سے زیادہ 8 سال میں پوری کرنا ہوگی۔ اگر کوئی طالب علم کسی ناگزیر وجہ کی بنا پر اس عرصہ میں اپنی ریسرچ مکمل نہ کرسکے تو competent authority اسے مزید دو سال کی مہلت دے سکتی ہے نئی پالیسی کی ان تینوں شقوں سے پہلے سے انرولڈ طلبا بھی فائدہ اُٹھا سکیں گے۔ خیال رہے کہ گذشتہ برس نومبر میں ہائیر ایجوکیشن کمیشن (ایچ ای سی) نے 2 سالہ ڈگری پروگرام ختم کرنے کا اعلان کیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.