نواز شریف کی میڈیکل رپورٹس برطانیہ سے پاکستان کیوں نہیں آرہیں،فواد چودھری نے بتا دیا

Spread the Story

اسلام آباد (جی سی این رپورٹ) نواز شریف کی میڈیکل رپورٹس برطانیہ سے کیوں نہیں بھجوائی جا رہیں؟ بظاہر نواز شریف کی میڈیکل رپورٹس نہ بھیجنے کی ایک ہی وجہ ہے کہ برطانیہ میں ہونیوالے ٹسٹ پاکستان میں ہونیوالے میڈیکل ٹسٹ سے مختلف ہیں اور برطانوی ڈاکٹر نواز شریف کو شدید بیمار قرار دینے سے ہچکچا رہے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر فواد طودھری نے اپنے ایک ٹوئیٹ میں کہا ہے کہ نواز شریف کی میڈیکل رپورٹس اس لیے نہیں بھیجی جا رہی ہیں کہ ان کے نتائج پاکستان میں ہونے والی میڈیکل رپورٹس سے مختلف ہیں۔آخرنواز شریف کی میڈیکل رپورٹس برطانیہ سے کیوں نہیں بھجوائ جارہیں؟ بظاہر اس کی ایک ہی وجہ ہے کہ برطانیہ میں ہونیوالے ٹسٹ پاکستان میں ہونیوالے میڈیکل ٹسٹ سے مختلف ہیں اور برطانوی ڈاکٹر نواز شریف کو شدید بیمار قرار دینے سے ہچکچا رہے ہیں،اس کا ایک مطلب یہ ہے کہ پنجاب حکومت نے جو میڈیکل ٹسٹ کروائے وہ مشکوک تھے، ان حالات میں پنجاب حکومت کو ایک انکوائری بٹھانی چاہئے جو محکمہ صحت، لیبارٹری اور ڈاکٹر صاحبان کی شریف خاندان سے ملی بھگت کے معاملے کا جائزہ لے اور عوام کے سامنے مکمل حقائق رکھے۔ٹوئیٹر پر جاری پیغام میں ان کا کہنا تھا کہ آخرنواز شریف کی میڈیکل رپورٹس برطانیہ سے کیوں نہیں بھجوائی جا رہیں؟ ان کا کہنا ہے کہ بظاہر اس کی ایک ہی وجہ ہے کہ برطانیہ میں ہونیوالے ٹیسٹ پاکستان میں ہونیوالے میڈیکل ٹیسٹ سے مختلف ہیں اور برطانوی ڈاکٹر نواز شریف کو شدید بیمار قرار دینے سے ہچکچا رہے ہیں۔ان کا مزید کا کہنا ہے کہ اس کا ایک مطلب یہ بھی ہے کہ پنجاب حکومت نے جو میڈیکل ٹیسٹ کروائے وہ مشکوک تھے، ان حالات میں پنجاب حکومت کو ایک انکوائری بٹھانی چاہیے جو محکمہ صحت، لیبارٹری اور ڈاکٹر صاحبان کی شریف خاندان سے ملی بھگت کے معاملے کا جائزہ لے اور عوام کے سامنے مکمل حقائق رکھے۔اس سے قبل سابق وزیراعظم کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان نے نواز شریف کے پیر کو دل کے آپریشن کی خبروں کی تر دید کی ہے۔ پاکستان مسلم لیگ (ن) پنجاب کے صدر رانا ثناء اللہ نے اسلام آباد ہائیکورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو میں کہا تھا کہ میاں نواز شریف کا آپریشن پیر کو ہونے جا رہا ہے اور شہباز شریف صرف ایک دن کے لیے وہاں رکے ہوئے ہیں جبکہ وہ نوازشریف کا آپریشن ہونے کے بعد جلد واپس آئیں گے۔تاہم اب سابق وزیراعظم کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان نے نواز شریف کے پیر کو دل کے آپریشن کی خبروں کی تردید کردی ہے۔ اپنے بیان میں ڈاکٹر عدنان کا کہنا تھا کہ نواز شریف کے دل کے آپریشن کی خبروں میں صداقت نہیں بلکہ کارڈک کیتھرائزیشن اور کورونری انٹروینشن طے شدہ پروگرام کے مطابق ہوں گی۔ ڈاکٹرعدنان نے کہا کہ سابق وزیراعظم کو دعاؤں کی ضرورت ہے اور نیک خواہشات کا اظہار کرنے والوں کے شکرگزار ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.