یہ بزرگ کس کیس میں پھنس گیا

Spread the Story

لاہور (جی سی این رپورٹ) لاہور کی فیملی کورٹ کا انوکھا کیس ، شادی کے 35سال بعد 95 سالہ معمرخاتون نے 100 سالہ شوہر کیخلاف فیملی کورٹ میں جہیز واپسی کا دعویٰ دائر کر دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق پتوکی کی رہائشی 95 سالہ تاج بی بی کی شادی 100 سالہ اسماعیل سے ہوئی۔ بعدازاں اسماعیل نے تاج بی بی کو طلاق دے دی۔ شادی کے 35 سال ہونے کے باوجود سابقہ بیوی نے فیملی کورٹ میں درخواست دائر کی ، اسماعیل سے جہیز کا سامان واپس دلوایا جائے۔
جبکہ دوسری جانب اسماعیل اپنے وکیل شہباز کے ساتھ کورٹ میں پیش ہوا، 100 سالہ شخص کا کہنا تھا کہ بیوی جہیز میں ایک پیالہ بھی لے کر نہیں آئی تھی، میرے والد نے بارات کو کھانا کھلایا اور اسے تاج بی بی کو کپڑے بھی دئیے تھے ۔ جہیز کی فہرست میں وہ چیزیں بھی لکھ دی گئی ہیں جو اس وقت تھی ہی نہیں، پتوکی میں گیس نہیں ہے لیکن گیس کا ہیٹر لکھ دیا گیا ہے ۔

بیوی کا دعویٰ جھوٹا ہے۔ سول کورٹ میں اسماعیل نے 85 سالہ گواہ یحیی نامی گواہ کو پیش کر دیا، گواہ نے موقف اختیار کیا کہ نکاح میرے سامنے ہوا ، تاج بی بی اپنے ساتھ جہیز میں کچھ نہیں لائی۔ اسماعیل کے وکیل شہبا زکا کہنا ہے کہ بیوی نے ایسی چیزوں کی واپسی کا مطالبہ کیا ہے جو 35 سالہ قبل تھیں ہی نہیں۔درخواست کو خارج کرنے کے لئے درخواست پیش کردی۔ یہ بات وا ضح رہے یہ فیملی سول کورٹ میں دائر ہونے والے انوکھا واقعات میں سے ایک ہے۔ جس نے سوشل میڈیا صارفیں کو بھی اپنی جانب متوجہ کیا ہے۔ صارفین اس منفرد کیس پر تبصرہ کرتے نظر آتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.